logo

ای پیپر

اوپینین پول

کیا اترپردیش اسمبلی انتخابات کے نتائج نے مسلم ووٹ کو بے وقعت ثابت کردیا ؟

ہاں
نہیں

سری نگر۔ جموں و کشمیر کے پلوامہ ضلع میں سکیورٹی اور جنگجووں کے درمیان تصادم جاری ہے۔ پلوامہ کے ہاكريپورا گاؤں میں صبح چار بجے شروع ہوئے تصادم میں سکیورٹی فورسز نے جنگجووں کو گھیر لیا ہے۔سکیورٹی کو اطلاع ملی تھی کہ علاقے میں دو سے تین کی تعداد میں جنگجو موجود ہیں۔ ان جنگجووں میں عارف للهاری نام کے جنگجو کے ہونے کی اطلاع ہے۔ یہ بھی بتایا جا رہا ہے کہ لشکر طیبہ کا کمانڈر ابو دجانا کو بھی سکیورٹی فورسز نے گھیر لیا ہے۔ ابو دجانا لشکر کا بڑا کمانڈر ہے اور وہ کئی بار بارڈر کراس کر پاکستان سے ہندوستان آ چکا ہے۔ملی معلومات کے مطابق علاقے میں سی آر پی ایف کی 182، 183 بٹالین، 55 راشٹریہ رائفل اور اسپیشل آپریشن گروپ نے علاقے میں سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے۔ علاقے میں تین جنگجووں کے ہونے کی خبر ہے۔ خبروں کے مطابق جنگجو هاكريپورا گاؤں کے ایک گھر میں چھپے ہیں، سکیورٹی فورسز نے اس گھر کو چاروں طرف سے گھیر لیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ فی الحال آپریشن جاری ہے اور آپریشن ختم ہونے کے بعد ہی اس بات کی تصدیق ہو پائے گی کہ گھر میں کون کون سے اور کتنے جنگجو چھپے ہیں۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh