logo

ای پیپر

اوپینین پول

کیا اترپردیش اسمبلی انتخابات کے نتائج نے مسلم ووٹ کو بے وقعت ثابت کردیا ؟

ہاں
نہیں

ممبئی، 18 دسمبر (یو این آئی) شیو سینا کے لیڈر سنجے راوت نے گجرات اسمبلی انتخابات کے سلسلے میں آج کہا کہ رجحان کو دیکھتے ہوئے لگتا ہے کہ ریاست عوام بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے خوش نہیں ہیں۔ نتائج کے رجحان کے مطابلق بی جے پی 99 اور کانگریس 80 سیٹوں پر آگے چل رہی ہے۔ گجرات اسمبلی میں کل 182 نشستیں ہیں اور حکومت بنانے کے لئے 92 نشستوں کی ضرورت ہے۔ مسٹر سنجے راوت نے کہا کہ بی جے پی گجرات کے ترقی ماڈل کا حوالہ دے کر مرکز کے اقتدار میں آئی ہے۔ اگر گجرات کے ہی عوام بی جے پی سے خوش نہیں ہیں تو سمجھ سکتے ہیں کہ پورے ملک کے عوام بی جے پی کے سلسلے میں کیا سوچ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کو گجرات کے لوگوں کو سمجھنا چاہئے اور ان کی ناراضگی کا سبب تلاش کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی حکومت سکیورٹی ، کشمیر، پاکستان، نوٹ بندی ، بے روزگاری اور کسانوں کی خود کشی جیسے کئی معاملوں پر کامیابی حاصل نہیں کر پائی۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کی گجرات میں حکومت بن سکتی ہے لیکن گجرات میں ہوئے الیکشن کو اگر دیکھیں تو وہاں کی عوام کی ذہنی کیفیت ہے تقریبا اسی طرح کی کیفیت بی جے پی کے تئيں پورے ملک میں ہے۔ 

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh