logo

ای پیپر

اوپینین پول

کیا اترپردیش اسمبلی انتخابات کے نتائج نے مسلم ووٹ کو بے وقعت ثابت کردیا ؟

ہاں
نہیں

لندن: برطانیہ میں 48سالہ لوئس کے گھر 18 اسقاط حمل کے بعد  بیٹے کی پیدائش ہوئی ہے۔برطانیہ کے شہرسوینڈن  سے تعلق رکھنے والی 48 سالہ لوئس وارنفورڈ 18 مرتبہ اسقاط حمل کی اذیت سے گزرنے کے بعد آخرکار اولاد کی  نعمت حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئیں ۔ لوئس وارنفورڈ کے جسم میں ایسے زہریلے خلیے پیدا ہوگئے تھے جو جنین کو نشوونما کے مراحل میں داخل ہونے کےبعد ختم کردیتے تھے۔لوئس کے شوہر مارک کا کہنا تھا کہ 80 ہزار پاؤنڈعلاج معالجے پر خرچ کرنے کے باوجود 20 سال کا عرصہ اذیت میں گزارا لیکن آخرکار میری بیوی امید سے ہوئی اور ڈاکٹرزکی ہدایت پر عمل کرتے ہوئے  ہمارا بیٹا ولیم پیدا ہوا۔لوئس وارنفورڈ کا غیرملکی خبررساادارے سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اولاد کی نعمت حاصل کرنے کے لئے تمام دستیاب  وسائل استعمال کیے لیکن کوئی کامیابی حاصل نہیں ہوئی، میں جتنی مرتبہ ناکام ہوئی اولاد کی خواہش اتنی ہی شدت سے میرے اندر جاگتی رہی اور یہ میری آخری کوشش تھی جس میں کامیاب ہوئی۔ ان کا کہنا تھا کہ اسقاط حمل کے بعد عورت  کی زندگی میں جو اندھیرا چھا جاتا ہے وہ لمحات ناقابل بیان ہیں  لیکن تمام تکالیف کے بعد آخرکارمیں ماں بن گئی اس سے بڑی خوشی میرے لئے کوئی اور نہیں ہوسکتی۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh