logo

ای پیپر

اوپینین پول

کیا اترپردیش اسمبلی انتخابات کے نتائج نے مسلم ووٹ کو بے وقعت ثابت کردیا ؟

ہاں
نہیں

ایڈیلیڈ، 05 دسمبر (یواین آئی) جیمس اینڈرسن (43 رن پر پانچ وکٹ) اور کرس ووکس (36 رن پر چار وکٹ) کی بہترین گیندبازی سے انگلینڈ نے آسٹریلیا کی دوسری اننگز کو چائے کے وقفہ کے ٹھیک پہلے 138 رن پر سمیٹ دیا۔مہمان ٹیم کو اس سے دوسرے ٹیسٹ کے چوتھے دن منگل کو جیت کے لیے 354 رنز کا ہدف ملا ہے۔دوسرے میچ کے چوتھے دن انگلینڈ نے اپنی گیندبازی سے آسٹریلیا کی دوسری اننگز کو چائے کے وقفہ سے ٹھیک پہلے 58 اوور میں 138 رنز پر ڈھیر کر دیا۔ آسٹریلیائی اننگز میں عثمان خواجہ اور مشیل اسٹارک کی 20-20 رنز کی اننگز ہی سب سے بڑی رہی۔کپتان اسمتھ چھ رن اور نائب کپتان ڈیوڈ وارنر 14 رنز کے اسکور پر آؤٹ ہوئے۔میزبان ٹیم اپنے کل کے اسکور میں محض 85 رنز ہی جوڑ سکی اور اس نے اپنے باقی کے چھ وکٹ صرف 67 رن جوڑ کر ہی گنوا دیے لیکن پہلی اننگز کی برتری کی بنیاد پر آسٹریلیا نے انگلینڈ کے سامنے جیت کے لیے 354 رنز کا ہدف رکھا ہے۔آسٹریلیا کی دوسری اننگز میں انگلش گیندباز اینڈرسن نے 22 اوور میں 43 رن پر سب سے زیادہ پانچ وکٹ حاصل کیے جبکہ ووکس کو 16 اوور میں 36 رن پر چار وکٹ ملے۔ اوورٹن کو ایک وکٹ ملا۔ انگلینڈ کی اس بہترین گیندبازی کے بعد آسٹریلیا کے کپتان اسٹیون اسمتھ کے حریف ٹیم سے فالوآن نہ کرانے کے فیصلے پر بھی کافی سوال اٹھے۔ اس سے پہلے صبح آسٹریلیا نے کل کے 53 رن پر چار وکٹ سے اننگز کو آگے بڑھایا تھا۔اس وقت بلے باز پیٹر هینڈسکومب تین اور ناتھن لیون تین رن پر ناٹ آؤٹ تھے۔کینڈسکومب 12 رن اور لیون 14 رنز پر اینڈرسن کا شکار بنے۔ ووکس نے ٹم پین کو 11 رنز اور اینڈرسن نے پھر مشیل اسٹارک (20) کو آؤٹ کیا۔ا سٹارک کو آؤٹ کرنے کے ساتھ ہی اینڈرسن نے آسٹریلیا میں اپنی پہلے اننگز میں پانچ وکٹ اپنے نام کرنے کا اعزاز بھی حاصل کیا ۔ جوش ہیزل وڈ (تین) کو اوورٹن نے آؤٹ کرکے آسٹریلیا کی اننگز سمیٹ دی۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh