logo

ای پیپر

اوپینین پول

کیا اترپردیش اسمبلی انتخابات کے نتائج نے مسلم ووٹ کو بے وقعت ثابت کردیا ؟

ہاں
نہیں

سڈنی، 05 جنوری (یواین آئی) عثمان خواجہ اور کپتان اسٹیون ا سمتھ کے مابین تیسرے وکٹ کے لئے 107 رن کی ناٹ آوٹ سنچری شراکت کی بدولت آسٹریلیا نے انگلینڈ کے خلاف پانچویں اور آخری ایشز کرکٹ ٹسٹ کے دوسرے دن جمعہ کو دن کے اختتام تک دو وکٹ پر 193 رنز بنا کر اپنی پوزیشن مضبوط کرلی ۔آسٹریلیا نے دوسرے دن کے اختتام تک اپنی پہلی اننگز میں 67 اوور کے کھیل میں دو وکٹ کے نقصان پر 193 رنز بنا لئے ہیں۔وہ اب انگلینڈ کے اسکور سے 153 رنز پیچھے ہے جبکہ اس کے آٹھ وکٹ محفوظ ہیں۔کریز پر خواجہ 91 رنز اور اسمتھ 44 رن پر ناٹ آؤٹ ہیں۔انگلینڈ میزبان ٹیم کی اننگز میں صرف دو وکٹ حاصل کرنے میں ہی کامیاب رہی جس میں سلامی بلے باز کیمرون بینکرافٹ(صفر) کو اسٹیورٹ براڈ نے جبکہ ڈیوڈ وارنر (56) جیمز اینڈرسن نے آؤٹ کیا۔میزبان ٹیم نے صبح انگلینڈ کی پہلی اننگز 112.3 اوور میں 346 رن پر سمیٹ دی تھی لیکن اس کی اننگز کی شروعات بھی خراب ہی رہی اور سلامی بلے باز بینکرافٹ کھاتہ ہی نہیں کھول سکے۔وہ سات گیندیں ہی کھیل سکے تھے کہ براڈ نے انہیں ٹیم کے ایک رن کے اسکور پر ہی بولڈ کر دیا جبکہ نائب کپتان وارنر چائے کے وقفہ سے پہلے آؤٹ ہو گئے اور آسٹریلیا نے 96 رن جوڑ کر اپنے دونوں سلامی بلے بازوں کو گنوا دیا۔وارنر نے 104 گیندوں میں چھ چوکے لگا کر 56 رنز کی نصف سنچری اننگز کھیلی اور خواجہ کے ساتھ دوسرے وکٹ کے لئے 85 رن کی ساجھےداری کی۔ جانی بيرسٹو نے اینڈرسن کی گیند پر وارنر کو کیچ آوٹ کیا۔آسٹریلیائی نائب کپتان وارنر کے بعد لیکن کپتان اسمتھ نے خواجہ کے ساتھ مل کر پھر سنچری شراکت کی اور ٹیم کو کوئی اور نقصان نہیں ہونے دیا۔خواجہ اپنی سنچری سے اب صرف نو رن دور ہیں جبکہ اسمتھ ناٹ آؤٹ 44 رن بنانے کے ساتھ آسٹریلیا کی جانب سے تیز 6000 ٹیسٹ رنز بنانے والے دوسرے بلے باز بن گئے ہیں۔انہوں نے 111 اننگز میں یہ کامیابی حاصل کی اور وہ عظیم بلے باز ڈان بریڈمین کے بعد ایسا کرنے والے دوسرے کھلاڑی ہیں۔دنیا کے نمبر ایک ٹیسٹ بلے باز اسمتھ نے موجودہ ایشز سیریز میں ڈبل سنچری سمیت اب تک تین سنچری بنائی ہے ۔انہوں نے ناٹ آؤٹ 44 رن کے لئے 88 گیندوں میں تین چوکے لگائے جبکہ خواجہ نے 204 گیندوں کی اننگز میں سات چوکے اور ایک چھکا لگا کر آسٹریلیا کو مضبوط پوزیشن میں پہنچایا ۔اس سے پہلے صبح انگلینڈ نے اپنی اننگز کا آغاز کل کے 233 رن پر پانچ وکٹ سے آگیا کیا تھا۔ اس وقت بلے باز ڈیوڈ ملان 55 رن پر ناٹ آؤٹ تھے۔ انہوں نے 180 گیندوں کی اننگز میں چھ چوکے لگا کر 62 رن کی اہم اننگز کھیلی لیکن مشیل اسٹارک نے انہیں اسمتھ کے ہاتھوں کیچ کراکر انگلینڈ کا چھٹا وکٹ حاصل کیا۔انگلینڈ کی نچلی صف کے بلے بازوں نے آسٹریلیا کی خراب فیلڈنگ کا فائدہ اٹھاتے ہوئے 95 رن اور جوڑے۔اسمتھ نے بھی میچ میں تین کیچ ڈراپ کیے ۔ وہیں پیٹ کمنز نے ٹام کران کا کیچ 21 کے اسکور پر چھوڑا جبکہ اس کے اگلے ہی اوور میں تیزگیندباز جوش ہیزل وڈ نے معین علی کا کیچ 22 کے اسکور پر ڈراپ کیا۔ ٹام نے پھر 39 رنز اور علی نے 30 رنز بنائے اور 43 رن کی ساجھےداری کی۔دونوں انگلش بلے بازوں کو کمنز نے آؤٹ کیا جبکہ نویں نمبر کے بلے باز براڈ نے 31 رن کا تعاون دیا اور ٹام کے ساتھ 41 رن کی ساجھےداری کی۔ لنچ سے پہلے تک براڈ نے اسپن گیند بازی کا اچھا سامنا کیا لیکن پھر اسپنر ناتھن لیون کا شکار بن گئے۔ میسن کرین (چار) کے رن آوٹ ہونے کے ساتھ ہی انگلینڈ کی اننگز 346 پر سمٹ گئی۔آسٹریلیا کی جانب سے پیٹ کمنز نے 80 رن پر سب سے زیادہ چار وکٹ حاصل کیے جبکہ مشیل اسٹارک اور ہیزل وڈ کو دو دو وکٹ ملے۔ لیون کو ایک وکٹ ملا۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh