logo

ای پیپر

اوپینین پول

کیا اترپردیش اسمبلی انتخابات کے نتائج نے مسلم ووٹ کو بے وقعت ثابت کردیا ؟

ہاں
نہیں

ڈنیڈن، 13 جنوری (یو این آئی) تیز گیندباز ٹرینٹ بولٹ (17 رن پر پانچ وکٹ) کی خطرناک گیند بازی کی بدولت نیوزی لینڈ نے پاکستان کو یہاں ہفتہ کو تیسرے ون ڈے میچ میں 183 رنوں سے ناک آؤٹ پانچ میچوں کی ون ڈے سیریز میں 3-0 کی ناقابل تسخیر شکست دی۔میزبان نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 50 اوور میں 257 رن کا مضبوط اسکور بنایا اور پھر پاکستان کو 27.2 اوور میں 74 رنوں پر ڈھیر کر کے 183 رنوں سے میچ جیت لیا اور پانچ میچوں کی ون ڈے سیریز میں 3-0 کی ناقابل تسخیر برتری حاصل کی۔پہلی بار بارش ہونے والے میچ میں نیوزی لینڈ نے ڈکٹورتھ لیوس کے قواعد کے تحت 61 رن بنائے اور دوسرے بارش سے متاثر میچ میں پاکستان کو ڈکٹورتھ لیوس کے ضوابط کے تحت آٹھ وکٹ سے شکست دی۔ پاکستان کو نیوزی لینڈ کے خلاف مسلسل چوتھی بار ون ڈے سیریز میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ ون ڈے میں نیوزی لینڈ کے خلاف پاکستان کی یہ مسلسل 9ویں شکست ہے۔ پاکستان کو اس سے پہلے 1995 سے 2000 کے درمیان جنوبی افریقہ کے خلاف مسلسل 14 میچوں میں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ پاکستان نے نیوزی لینڈ کے خلاف اپنا آخری میچ دسمبر 2014 میں شارجہ میں جیتا تھا۔ نیوزی لینڈ کے 258 رنوں کے ہدف کا تعاقب کرنے اتری پاکستان کی ٹیم بولٹ کے آگے گھٹنے ٹیکتی نظر آئی۔ چیمپئنز ٹرافی کے چیمپئن پاکستان نے صرف 16 رن کے اندر ہی اپنے چھ وکٹ گنوا دیئے تب ایسا لگ رہا تھا کہ پاکستان اپنا سب سے کم اسکور کا ریکارڈ توڑ دے گا۔لیکن کپتان سرفراز احمد ناٹ آؤٹ 14، محمد عامر 14 اور روممن رئیس کے 16 رنوں کی بدولت وہ 50 کا ہندسہ پار کرنے میں کامیاب رہا اور کسی طرح 74 کے اسکور تک پہنچ پایا جو ون ڈے میں پاکستان کو مشترکہ طور پر تیسرا کم از کم سکور ہے۔ ون ڈے میں پاکستان کا کم از کم اسکور 43 رن کا ہے جو اس نے 93-1992میں ویسٹ انڈیز کے خلاف کیپ ٹاؤن میں بنایا تھا۔ نیوزی لینڈ کے لئے میچ آف دی میچ کا خطاب پانے والے بولٹ نے 7.2 اوور میں 17 رنوں کے ساتھ پانچ وکٹیں حاصل کیں۔ انہوں نے اوپنر اظہر علی (0)، فخر زمان (2)، محمد حفیظ (0)، محمد عامر (14) اور روممن رئیس (16) کے وکٹ لئے.

یہ نیوزی لینڈ میں پاکستان کے کسی بھی بالر کے خلاف بہترین کارکردگی ہے۔اس کے علاوہ کولن منریو نے سات اوور میں 10 رن پر دو وکٹ لئے پھرگيسن نے چھ اوور میں 28 رن پر دو وکٹ لئے۔اس سے پہلے میزبان نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 50 اووروں میں 257 رنز بنائے۔ کپتان کین ولیمسن نے 101 گیندوں پر 73 رن بنائے جبکہ راس ٹیلر نے 64 گیندوں پرچار چوکوں کی مدد سے 52 رن بنائے۔ولیمزسن نے 69 رن کے ساتھ اوپنر مارٹن گپٹل (45) کے ساتھ تیسرے وکٹ کے لئے 74 رنوں کی شراکت کی۔ ٹیلر نے چوتھے وکٹ کیلئے ٹام لیتھم (35) کے ساتھ 51 رنز کی شراکت داری کی.

گپٹل نے 62 گیندوں میں 6 چھکے.

لامام نے 35 گیندوں پر 35 رنز بنا کر تین چوکوں کی مدد سے.پاکستان کے لئے، رومن راس (3 وکٹ 51)، حسن علی (3/59)، شاداب خان (2/51) اور فہیم اشرف (2 کے 2) نے ایک وکٹ حاصل کی.

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh