logo

ای پیپر

اوپینین پول

کیا اترپردیش اسمبلی انتخابات کے نتائج نے مسلم ووٹ کو بے وقعت ثابت کردیا ؟

ہاں
نہیں

نئی دہلی، 06 دسمبر (یواین آئی) ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان وراٹ کوہلی نے سری لنکا کے خلاف بدھ کو آخری میچ ڈرا رہنے کے بعد تین میچوں کی سیریز پر اطمینان کا اظہار کیا اور تسلیم کیا کہ ذاتی طور پر بھی یہ سیریز ان کے لیے کافی اچھی رہی ۔ہندوستان نے تین ٹسٹ میچوں کی سیریز ایک ۔صفر سے اپنے نام کی ۔پہلا میچ کولکتہ میں اور دوسرا میچ دہلی میں ڈرا رہا۔ وراٹ کوہلی کی کپتانی میں ہندوستان کی یہ مسلسل نویں سیریز جیت ہے اور اس کے ساتھ ہی اس نے آسٹریلیا کے عالمی ریکارڈ کی برابری بھی کرلی ہے۔ وراٹ کی کارکردگی اس سیریز میں شاندار رہی ہے اور انہیں میچ میں 243 اور 50 رنز کی اننگز کے لئے مین آف دی میچ اور تین میچوں میں دو نصف سنچریوں سمیت تین سنچری کے ساتھ کل 610 رن بنانے کے لیے مین آف دی سیریز منتخب کیا گیا ہے۔ کپتان نے میچ کے بعد کہا "یہ ذاتی طور پر میرے لئے بہت اچھی سیریز رہی اور ٹیم کے لیے بھی اچھی تھی۔"انہوں نے کہا "میں ایک طرح سے دل کی بات بتا رہا ہوں کہ میں ٹیسٹ میں بھی ویسے ہی کھیلتا ہوں جیسا کہ ون ڈے میں۔ میرے پاس دونوں فارمیٹ میں مختلف طرح سے کھیلنے کا کوئی فارمولا نہیں ہے۔ان دنوں ایسا کوئی طے فارمولا ہی نہیں ہوتا ہے۔ آپ خود پراعتماد رکھیں تو کسی بھی فارمیٹ میں اچھا کھیل سکتے ہیں۔ "وراٹ نے کہا "میں جب کپتان نہیں تھا تب میرے لئے حالات کے بارے میں غور کرنا مشکل ہوتا تھا.

لیکن جب میں نے ٹیسٹ میں کھیلنا شروع کیا تب مجھ پر دباؤ آنے لگا تھا.

لیکن جب میں نے کچھ حاصل کیا تب میں آرام سے کھیلنے لگا۔ ابھی میرے لیے صورتحال پہلے سے کافی مختلف ہو چکی ہے.

"۔ہندوستان کے اسٹار کھلاڑی اب جنوبی افریقہ کے دورے میں نظر آئیں گے۔.

سری لنکا کے خلاف ون ڈے اور ٹوئنٹی 20 میچوں کی سیریز میں وراٹ کو آرام دیا گیا ہے۔ٹیم کی کوٹلہ ٹیسٹ میں خراب سلپ فیلڈنگ کے سوال پر پجارا نے کہا ’’یہ بات صحیح ہے کہ ہم نے کوٹلہ ٹیسٹ میں سلپ میں کئی کیچ چھوڑے ہیں۔ ہمیں سلپ فیلڈنگ کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔ ہمیں کچھ ماہر کھلاڑی سلپ فیلڈنگ کے لئے تیار کرنے ہونگے اس کے لئے کچھ کھلاڑیوں سے بات کی گئی ہے اور جنوبی افریقہ پہنچنے کے بعد اس پر کام شروع ہو جائے گا۔سال 2017 کو اپنے لئے بہترین بتاتے ہوئے پجارا نے کہا ’’مجھے کل ہی پتہ لگا کہ میں رواں سال کا ٹاپ اسکورر بن چکا ہوں لیکن کھیل میں ہمیشہ بہتر کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ کچھ ایسے حلقے ہیں جہاں مجھے بہتر کرنا ہے اور میں اس کام پر لگا ہوا ہوں‘‘۔اجنکیا رہانے کا بچاتے ہوئے پجارا نے کہا ’’رہانے نے گھر اور باہر مسلسل بہترین بلے بازی کی ہے۔ ہر کھلاڑی کے کیریئر میں کچھ خراب وقت آتا ہے اور رہانے بھی فی الحال ایسے ہی دور سے گزر رہے ہیں۔ لیکن ہمیں امید ہے کہ وہ واپسی کریں گے‘‘۔کوٹلہ میں تیسرے ٹیسٹ کے ڈرا ہونے پر پجارا نے کہا کہ ٹیم کو امید تھی کہ آخری دو دن وکٹ گریں گے لیکن موسم کی وجہ سے ایسا نہیں ہوپایا ۔ اس کے باوجود ہندستانی بلے بازوں نے اچھی گیندبازی کی۔ گیند بازوں نے پورے سیشن میں اچھا مظاہرہ کیا ہے بس کوٹلہ میں ہی گیندبازوں کو وکٹ سے کوئی مدد نہیں مل پائی۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh