logo

ای پیپر

اوپینین پول

کیا اترپردیش اسمبلی انتخابات کے نتائج نے مسلم ووٹ کو بے وقعت ثابت کردیا ؟

ہاں
نہیں

نئی دہلی، 22 دسمبر (یو این آئی) ماہرکرکٹر عمران خان اور سعید اجمل سمیت پاکستان کے 22 کھلاڑی تنخواہ تنازعہ کی وجہ افریقی ملک یوگانڈا میں پھنس گئے ہیں۔ ایفرو ٹوئنٹی 20 کرکٹ لیگ میں حصہ لینے کے لیے پاکستانی کرکٹر اور کمنٹیٹر سمیت 22 کھلاڑی یوگانڈا گئے تھے لیکن منتظمین کے ساتھ ان کی تنخواہ کو لے کر تنازعہ ہو گیا اور انہوں نے ٹورنامنٹ کو درمیان میں ہی چھوڑ کر وطن لوٹنے کا فیصلہ کیا۔ حالانکہ اس فیصلے کے بعد سبھی پاکستانی کھلاڑیوں کی ٹکٹوں کو ہی منسوخ کرا دیا گیاہے۔یوگانڈا کرکٹ ایسوسی ایشن (یو سی اے ) نے فی الحال تنازعہ بڑھنے کے بعد واضح کیا ہے کہ پاکستانی کرکٹروں کی ٹکٹوں کو واپس بک کرایا جائے گا۔ پاکستانی ٹیم میں سابق کپتان عمران خان، اجمل اور کمنٹیٹر عامر سہیل سمیت کل 21 کھلاڑی ہیں جنہیں اس عجیب و غریب صورت حال کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ایفرو ٹوئنٹی 20 کرکٹ لیگ میں آٹھ ٹیمیں شامل ہیں جسے يوسی اے کرا رہا ہے اور بین الاقوامی کرکٹ کونسل (آئی سی سی) سے منظورشدہ ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے اس کی اطلاع دی ہے۔ یہ ٹورنامنٹ 17 دسمبر کو شروع ہونا تھا اور یکم جنوری 2018 تک کھیلا جانا تھا لیکن ٹورنامنٹ سے کچھ روز قبل تک منتظمین نے کرکٹروں کی تنخواہ جاری نہیں کی۔ایفرو لیگ کی فاتح ٹیم کی انعامی رقم 50 ہزار ڈالر تھی جو اس ٹیم کے سبھی کھلاڑیوں میں تقسیم کی جانی تھی۔ اجمل نے بتایا کہ انہیں منتظمین کی جانب سے کئی مرتبہ تنخواہ کا بھروسہ دلایا گیا تھا۔ انہوں نے کہا ’’ہم نے منتظمین سے تنخواہ دینے کے لیے کہا لیکن وہ معاہدہ کے مطابق ہماری تنخواہ جاری نہیں کر رہے تھے۔ اس کے بعد آرگنائزر پیسہ اکٹھا کرنے کے لیے دبئی چلے گئے لیکن پھر واپس ہی نہیں آئے۔پاکستانی کرکٹر نے کہا ’’ہم نے اپنی مخالفت کا اظہار کرنے کے لئے ٹورنامنٹ میں کھیلنے سے انکار کر دیا لیکن انہوں نے ہماری واپسی کی ٹکٹیں ہی منسوخ کرا دیں۔ ہم نے یوگانڈا کرکٹ ایسوسی ایشن کو اس کی اطلاع دی اور بعد میں کسی طرح 21 دسمبر کو ہماری ٹکٹیں بک ہوسکیں۔لیکن یہاں آمدنی کے بجائے ہمیں اپنے ہی پیسوں سے ٹکٹیں بک کرانی پڑی ہیں اور امید ہے کہ ہفتہ تک ہم اپنے گھر وں میں واپس آجائیں گے‘‘۔اگرچہ اجمل نے بتایا کہ افریقی ملک میں انہیں کسی طرح کی پریشانی نہیں ہوئی اور وہ مسلسل پاکستان ہائی کمیشن کے رابطے میں بنے ہوئے تھے۔ انہوں نے اپنے ساتھی کھلاڑیوں کے ساتھ ٹویٹر پر ایک تصویر بھی پوسٹ کی تاکہ ان کے مداحوں کو ان کی خیریت معلوم ہو سکے۔ انہوں نے تصویر میں لکھا ‘‘ہم سبھی یہاں محفوظ ہیں اور افریقی ملک میں مزہ کر رہے ہیں‘‘۔اس دوران پی سی بی نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی ادارے آئی سی سی نے ہی ان سے رابطہ کرکے اس لیگ کے لیے کھلاڑیوں کو دستیاب کرانے کے لئے کہا تھا۔ پاکستانی بورڈ نے کہا کہ وہ اس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے اور اس پر کارروائی کرے گی ساتھ ہی یہ کھلاڑیوں پر منحصر کرے گا کہ وہ اپنے منتظمین سے ذاتی طور پر رابطہ کر کے سمجھوتہ کریں۔

اس پوسٹ کے لئے کوئی تبصرہ نہیں ہے.
تبصرہ کیجئے
نام:
ای میل:
تبصرہ:
بتایا گیا کوڈ داخل کرے:


Can't read the image? click here to refresh